خبریں

آیت اللہ تسخیری کی رحلت پر آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کا تعزیتی پیغام

آیت اللہ تسخیری کی رحلت پر آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کا تعزیتی پیغام

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ آیت اللہ محمد علی تسخیری کی رحلت پر بحرین سے تعلق رکھنے والے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے رکن آیت اللہ شیخ عیسی قاسم نے اپنے پیغام میں مرحوم کی خدمات کو سراہتے ہوئے تسلیت پیش کی ہے۔  
اس بیان کا مکمل متن مندرجہ ذیل ہے۔

بسم اللہ الرحمن الرحیم
إنّا لله وإنّا إليه راجعون
آیت اللہ محمد علی تسخیری کہ جنہوں نے اسلام اور مسلمین کی خدمت میں اپنی مبارک زندگی صرف کر دی، کے انتقال پر حضرت ولی عصر امام زمانہ ارواحنا فداہ، فقہا، علما، قوم کے مجاہدین و مخلصین نیز مرحوم کے اہل خانہ اور تمام مومنین کی خدمت میں مخلصانہ تسلیت پیش کرتا ہوں۔
خداوند عالم دین اور امت کے لیے ہونے والے اس نقصان کا ازالہ کرے، مرحوم عالم باعمل، مجاہد راہ حق اور ایثار و قربانی کا پیکر تھے۔ وہ عقل، فہم، فراست، ایمان، اخلاق، صداقت اور دیانت کے عظیم اسوہ تھے۔
خداوند عالم انہیں غریق رحمت کرے، قبر، برزخ، محشر اور آخرت میں انہیں نورانیت عطا کرے، اور انہیں محمد اور آل محمد کے جوار میں جگہ عنایت کرے۔
عیسی احمد قاسم
۱۸ اگست ۲۰۲۰

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آیت اللہ تسخیری کا جسد خاکی حرم حضرت معصومہ (ع) میں دفن کیا جائے گا

آیت اللہ تسخیری کا جسد خاکی حرم حضرت معصومہ (ع) میں دفن کیا جائے گا

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کی سپریم کونسل کے ممبر، آیت اللہ "محمد علی تسخیری" کی نماز جنازہ جمعرات کو قم میں ہوگی۔
آیت اللہ تسخیری کے اہل خانہ نے بتایا ہے کہ اس گرانقدر عالم دین کے جسد خاکی کو 20 اگست بروز جمعرات قم میں ، حرم حضرت معصومہ (ع) میں نماز جنازہ کے بعد دفن کیا جائے گا۔
خیال رہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے تشییع جنازہ اور تدفین کی رسومات مختصر اور محدود انجام دی جائیں گی۔
یاد رہے کہ رہبر انقلاب اسلامی کے عالم اسلام کے امور میں مشیر، آیت اللہ تسخیری تہران کے ایک ہسپتال میں ۷۶ سال کی عمر میں دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے گزشتہ روز رحلت کر گئے۔

’’خمینی سینیگال‘‘ کا انتقال ہو گیا

’’خمینی سینیگال‘‘ کا انتقال ہو گیا

افریقی ملک سینیگال سے تعلق رکھنے والے شیعہ عالم دین اور مبلغ اسلام حجۃ الاسلام و المسلمین شیخ ’نوح مانی‘ دار دنیا کو الوداع کہہ گئے ہیں۔
مرحوم مغفور عراق، لبنان اور شام کے حوزات علمیہ میں دینی تعلیم حاصل کرنے کے بعد اپنے ملک میں واپس پلٹے اور چالیس سال تک اپنے علاقے میں مذہب تشیع کی نشر و اشاعت میں مصروف رہے۔
انہوں نے سینیگال کے شہر زیگیونچر (Ziguinchor) میں ’’رسول اعظم سینٹر‘‘ قائم کر کے بہت سارے شاگردوں کی تربیت کی اور قرآن و اہلبیت(ع) کی تعلیمات سے آشنا کیا۔
مذہب تشیع کے فروغ میں ان کی بے نظر شجاعت اور دلیری کے پیش نظر علاقے کے لوگوں نے انہیں ’’خمینی سینیگال‘‘ کا لقب دیا۔
مرحوم شیخ مانی جو آخری عمر تک مدرسہ الرسول الاعظم (ص) میں دینی سرگرمیاں انجام دیتے رہے، نے بڑی تعداد میں مبلغین کو تیار کر کے دیگر شہروں میں تبلیغ کے لیے بھیجا۔
حجۃ الاسلام و المسلمین شیخ نوح مانی اپنے اچھے اخلاق اور بے لوس خدمات کی وجہ سے علاقے کے لوگوں میں خاص احترام کے حامل تھے۔
سینیگال سے تعلق رکھنے والے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی جنرل کونسل کے رکن کا جلوس جنازہ ’لبیک یا حسین‘ کے شعار کے ساتھ نکالا گیا۔
کورونا وائرس کی پابندیوں کے باوجود کثیر تعداد میں لوگوں نے مرحوم کے تشییع جنازہ میں شرکت کی۔

آیت اللہ تسخیری کے انتقال پر رہبر انقلاب کا تعزیتی پیغام

آیت اللہ تسخیری کے انتقال پر رہبر انقلاب کا تعزیتی پیغام

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ رہبر انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ خامنہ ای نے ایک پیغام کے ذریعے عالم باعمل، مجاہد راہ حق اور مبلغ اسلام و داعی اتحاد مسلمین آیت اللہ محمد علی تسخیری کے سانحہ ارتحال پر تعزیت پیش کی ہے۔
رہبر معظم انقلاب اسلامی کے پیغام کا متن کچھ اس طرح ہے۔

بسم اللہ الرحمن الرحیم
ہمیں یہ دردناک اور غمناک خبر موصول ہوئی ہے کہ اسلام اور تشیّع کی بولتی زبان، مجاہد عالم دین جناب حجۃ الاسلام والمسلمین الحاج شیخ محمد علی تسخیری رحمۃ اللہ علیہ کا انتقال ہوگیا ہے ۔
عالمی اسلامی معاشروں میں اس انتھک مرد کی مختلف خدمات ان کی کارکردگی کا درخشاں ثبوت ہیں۔
ان کے مضبوط ارادے اور حوصلہ افزا عزم نے حالیہ سالوں عارض ہونے والی جسمانی ناتوانیوں پر بھی قابو پا رکھا تھا اور وہ اپنی موثر، مفید اور بابرکت خدمات کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے تھے۔
اس فاضل و متعہد عالم دین کی ملک کے اندر بھی ذمہ داریوں اور گرانقدر خدمات ، مجاہدت اور کوششوں کا باب درخشاں ہے۔
 میں مرحوم کے اہلخانہ، پسماندگان ، دوستوں اور ساتھیوں کو تعزيت اور تسلیت پیش کرتا ہوں ۔ اور اللہ تعالی کی بارگاہ میں مرحوم کے لئے رحمت، مغفرت اور رضوان الہی کی دعا کرتا ہوں۔
سید علی خامنہ ای
۱۸ اگست ۲۰۲۰

............

آیت اللہ تسخیری کے سانحہ ارتحال پر ڈاکٹر ظریف کا تعزیتی پیغام

آیت اللہ تسخیری کے سانحہ ارتحال پر ڈاکٹر ظریف کا تعزیتی پیغام

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے رکن اور اسمبلی کے سابق سکریٹری جنرل آیت اللہ تسخیری کے انتقال پر ایران کے وزیر خارجہ کی جانب سے دئے گئے تعزیتی پیغام میں کہا گیا ہے کہ بلاشبہ عالم اسلام کی اس ممتاز شخصیت جس نے اپنی ساری بابرکت زندگی اسلام کے فروغ اور انقلاب و اسلامی جمہوریہ کے استحکام میں صرف کر دی کا ضیاع ناقابل جبران ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ مجمع تقریب مذاہب میں ان کی مخلصانہ خدمات نے عالم اسلام میں دشمنوں کی سازشوں کو ناکام بنایا اور تعلیمات اہل بیت(ع) کو عام کرنے میں موثر اقدامات اٹھائے۔
ڈاکٹر ظریف نے اپنے پیغام کے ذریعے رہبر انقلاب کی خدمت میں تسلیت پیش کرنے کے علاوہ مرحوم مغفور کے پسماندگان کو بھی تسلیت پیش کی ہے۔

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سابق سیکرٹری جنرل آیت اللہ تسخیری انتقال کر گئے

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سابق سیکرٹری جنرل آیت اللہ تسخیری انتقال کر گئے

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی سپریم کونسل کے رکن آیت اللہ محمد علی تسخیری آج صبح (منگل ۱۹ اگست، ۲۰۲۰) کو ۷۶ سال کی عمر میں ہارٹ اٹیک کی وجہ سے انتقال کر گئے۔
آیت اللہ تسخیری ۱۹۹۰ سے ۱۹۹۹ تک اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کے عہدہ پر فائز رہے اور بعد از آن انہوں نے مجمع تقریب مذاہب کی صدارت کا عہدہ سنبھالا اور تقریبا آخری عمر تک اس عہدہ پر رہتے ہوئے عالم اسلام میں اتحاد و یکجہتی پیدا کرنے کی خاطر موثر اقدامات انجام دئے۔
آپ ایک عرصے تک انٹرنیشنل مسلم علماء یونین کے نائب سربراہ بھی رہے لیکن بعد میں قرضاوی کے غلط موقف اختیار کرنے کی وجہ سے مستعفیٰ ہو گئے۔

آیت اللہ تسخیری کے حالات زندگی
آیت اللہ محمد علی تسخیری مرحوم آیت اللہ علی اکبر تسخیری کے بیٹے تھے آپ سن ۱۹۴۴ء میں پیدا ہوئے۔

ابتدائی اور حوزوی تعلیم کو درس خارج کے مرحلہ تک بزرگ اساتید جیسے شہید صدر ، آیت اللہ خوئی، آیت اللہ حکیم، شیخ جواد تبریزی، شیخ کاظم تبریزی ، صدر اباد کوبی، اور شیخ مجتبی لنکرانی سے حاصل کیا ۔ اس کے ساتھ ساتھ نجف اشرف کے معروف کالج سے فقہ و اصول اور ادبیات عرب سبجیکٹ میں بی اے بھی کیا حوزوی تعلیم کے ساتھ ساتھ آپ نے سیاسی مجاہدات میں بھی حصہ لیا جس کے نتیجہ میں ایک مدت کے لیے جیل میں بھی جانا پڑا۔

آپ نے حوزہ علمیہ قم میں تقریبا ۱۲ سال بزرگ اساتید جیسے آیت اللہ گلپائگانی، میرزا ہاشم آملی، اور وحید خراسانی کے دروس خارج میں شرکت کی۔  اور اس مدت میں حوزوی کتابوں کی تدریس میں بھی مصروف رہے۔

سن ۱۹۹۰ میں اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے قیام کے بعد اسمبلی کے پہلے سیکرٹری جنرل منتخب کئے گئے اور ۹ سال تک اس عہدے پر فائز رہتے ہوئے عالم تشیع میں اہم خدمات انجام دیں۔

اہل بیت(ع) انٹرنیشنل یونیورسٹی میں داخلے کا اعلان (2021-2022)

اہل بیت(ع) انٹرنیشنل یونیورسٹی میں داخلے کا اعلان (2021-2022)

اہل بیت(ع) انٹرنیشنل یونیورسٹی میں تعلیمی سال 2021-2022 کے لیے داخلے کا اعلان کر دیا گیا ہے؛

مکمل اطلاعیہ کا ترجمہ حسب ذیل ہے؛


اہل بیت علیہم السلام انٹرنیشنل یونیورسٹی تہران، اسلامی جمہوریہ ایران کی منسٹری آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سے تصدیق شدہ ہونے کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ کی بین الاقوامی یونیورسٹیز یونین (IAU) کی رکن بھی ہے جوکہ (UNESCO) کے تحت نظر ہے۔ یہ یونیورسٹی صرف غیر ایرانی  طلاب  کی اعلی سطح پر تعلیم و تربیت کے لئے کوشاں ہے. لہذا ہمیشہ کی طرح اس سال پھر اس یونیورسٹی کی طرف سے غیرایرانی طالب علموں کے  لیے تعلیمی سال  21-2020 میں ایم اے کی سطح پر ایڈمیشن  کا اعلان کیا جاتا ہے جو کہ ( 21 مارچ 2020) سے شروع ہوا ہے اور31 اگست 2020  تک جاری رہے گا.
خواہشمند اسٹوڈنٹس کو آگاہ کیا جاتا ہے کہ وہ  مندرجہ ذیل نکات پر توجہ فرمائیں.

◀️ ایم اے (ایم فل) میں داخلے کے شعبہ جات
۔ اسلامی علوم کی فیکلٹی (Faculty of Islamic Sciences)
   تاریخ اسلام (History of Islam)
   اسلامی فلسفہ و کلام (Islamic Theology and Philosophy)
  علم عرفان و ادیان (Mysticism and Religion)

۔ سماجی علوم کی فیکلٹی (Faculty of Social Sciences)
  بین الاقوامی تعلقات (International Relations)
  انتظام کاروبار (Business Administration)
  اقتصاد اسلامی (Islamic Economy)
۔ ادبیات اور انسانی علوم کی فیکلٹی (Faculty of Literature and Humanities)
  پرائیویٹ لاء (Private Law)
  کرمنال لاء (Penal Law and Criminology)
 فارسی ادب (ادبیات فارسی) (Persian Language and Literature)
 
◀️ ضروری نکات
1۔ اہل بیت(ع) یونیورسٹی ایران کے دار الحکومت تہران میں واقع ہے لہذا طلاب کو تہران میں سکونت پذیر ہونا پڑے گا۔
2۔ تمام دروس، امتحانات اور تھیسیس فارسی زبان میں ہوں گے۔ لہذا وہ طلاب جو فارسی زبان سے آشنا نہیں ہیں انہیں سب سے پہلے فارسی زبان کو کورس کرنا ہو گا جو یونیورسٹی میں ہی منعقد ہو گا۔
3۔ جس شعبہ میں طالب علم کا ایڈمیشن ہو جائے گا وہ بعد میں تبدیل نہیں ہو سکے گا۔
4۔ تمام دروس کی عناوین یونیورسٹی کی ویب سائٹ میں موجود ہیں۔

◀️ اہل بیت یونیورسٹی میں داخلے کے شرائط  
1۔ اپنے ملک سے بی اے (BA) کی ڈگری کا ہونا( جو 16 سال تعلیم پر مشتمل ہو؛ 12 سال پہلی سے ڈپلامہ اور 4 سال یونیورسٹی یا کالج)
نوٹ؛ اگر کسی طالب علم نے ابھی بی اے مکمل نہ کیا ہو تو اپنی یونیورسٹی سے عارضی سرٹیفکیٹ پیش کر کے ایڈمیشن لے سکتا ہے۔ البتہ تصدیق شدہ اصلی سرٹیفکیٹ کو اہل بیت(ع) یونیورسٹی میں حاضری کے وقت پیش کرنا ضروری ہے۔
2- عمر زیادہ سے زیادہ 28 ہو
نوٹ: اگر طلب علم  مندرجہ ذیل امتیازات  کا حامل ہو  تو عمر میں 32 سال تک  کی رعایت دی جائے گی:
حافظ قرآن ہو یا کم از کم 20 پارےحفظ کیے ہوں - کم از کم دو علمی کتابوں کا مولف یا  مترجم  ہو - متقاضی کے کم از کم دو ریسرچ آرٹیکل معتبر تعلیمی تحقیقی مجلات میں چھپ چکے ہوں – بی اے کے مساوی دینی مدارس کی سند کا حامل ہو.
3۔ غیر شادی شدہ ہو ( شادی شدہ افراد بھی ایڈمیشن لے سکتے ہیں مگر یونیورسٹی انہیں کوئی اضافی مراعات نہیں دے گی)
4۔ طالب عالم قابل اور باصلاحیت ہو
5۔ جسمانی اور ذہنی لحاظ سے تندرست ہو۔
6۔ بی اے کے سبجیکٹ ایم اے کے سبجکٹس سے ملتے جلتے ہوں۔
قرآن کریم کو ناظرہ پڑھ سکنے اور دینی احکام کا پابند ہونے جیسی خصوصیات کے حامل طالب علموں کو اسکالر شپ کے حصول میں اولویت حاصل ہو گی۔
7۔ متقاضی اس سے  پہلے ایم اے (ایم فل) کی سطح پر ایران کی کسی دوسری یونیورسٹی سے اسکالر شپ نہ لے چکا ہو.

◀️ تعلیمی اور رفاہی سہولیات
اہل بیت انٹرنیشنل یونیورسٹی میں سابقہ اسناد کی بنا پر ایڈمیشن کے دو طریقے ہیں:
1۔  وظیفہ  پر(Scholarships)  
اسکالر شپ پر پڑھنے والے طلباء کو مندرجہ ذیل سہولیات بغیر کسی اجرت کی وصولی کے فراہم کی جائیں گی؛
۔ 24 مہینے تک مفت ہاسٹل کا اہتمام (چار ٹرم پر مشتمل کورس)
۔ مفت تعلیم
۔ مفت کھانا (دوپہر اور رات کا کھانا) یا اس کے بدلے میں نقدی پیسہ
۔ دیگر ثقافتی سہولیات ( منجملہ تفریحی ٹورز، ہدایا۔۔۔)
- ورزشی سہولیات اور کئریر گائیڈنس.
- مفت علاج معالجہ کے لئے تعلیم مکمل ہونے تک بیمہ .( insurance)
- اسٹوڈنٹس افئیرز (Students Affairs)  میں فعالیت کی بنیاد پر اسٹوڈنٹس کی مالی معاونت کی جائے گی.
- علمی و تحقیقی سہولیات: (لائبریری، مفت انٹرنیٹ وغیرہ)

2۔  ذاتی خرچ پر  (Self finance)
سہولیات کے ضمن میں اسٹوڈنٹس کے مابین کسی طرح کی تفریق نہیں ہوگی (ذاتی خرچے پر آنے والے اسٹوڈنٹس کو بھی وظیفہ حاصل کرنے والوں کی جیسی سہولیات مہیا کی جائیں گی) صرف اتنا  فرق ہوگا کہ انہیں ہر سمسٹر کے (۱۰۰۰) ڈالر یونیورسٹی کو ادا کرنا ہوں گے.اس کے علاوہ ڈگری وغیرہ کے حصول تک کسی طرح کا کوئی فرق نہیں ہوگا.  

◀️ رجسٹریشن کا طریقہ کار
1- خواہشمند طلاب، اسلامی جمہوریہ ایران کی منسٹری آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی ویب سائٹ Soarg.ir:8081 پر اپنا فارم بھریں اور اپنے (Documents) یعنی: (تصویر، پاسپوٹ، تعلیمی اسناد وغیرہ) کو دی گئی ہدایات کے مطابق اسکین کر کے اپلوڈ کریں۔ رجسٹریشن کے اختتام پر درخواست دہندگان کو ایک کوڈ  موصول ہوگا کہ جسے وہ  یونیورسٹی داخلہ کمیٹی کو ارسال کریں گے۔ (دوسرا حصہ) درخوست دہندگان اپنا فارم بھرتے وقت 24-نمبر پر اہل بیت (ع) انٹرنیشنل یونیورسٹی کا انتخاب کرنا مت بھولیں کیونکہ اس سے آپ کی مطلوبہ یونیورسٹی مشخص ہو گی.
2- پہلا مرحلہ مکمل کرنے اور اپنا کوڈ وصول کرنے کے بعد کہ جس کا نمبر (1) میں ذکر کیا گیا ہے امیدوار دوبارہ نیچے دی گئی سایٹ: admission.abu.ac.ir   پر موجود فارم کو پر کرے گا جس کے بعد اسے ایک کوڈ دیا جائے گا کہ جس کی بنیاد پر وہ  یونیورسٹی سے رابطہ کر کے اپنے ایڈمیشن کی اطلاعات حاصل کرسکے گا۔
نکتہ  دوم : بہتر ہے کہ رجسٹریشن کا عمل شروع کرنے سے پہلے امیدوار  تما م اسناد  (Documents)کو تیار رکھیں.
نکتہ سوئم : رجسٹریشن کے مراحل مکمل کرنے کے بعد امیدوار یونیورسٹی کے جواب کا انتظار کریں.
نکتہ چہارم: رجسٹریشن کی انجام دہی  و دیگر  تمام تر مطلوبہ معلومات یونیورسٹی کی ویب سائٹ: abu.ac.ir دی گئی ہیں لہذا تاکید کی جاتی ہے کہ اپنا فارم پر کرنے سے پہلے اس سائٹ پر وزٹ کر کے ان کا مطالعہ کریں.

◀️ رجسٹریشن اور نئے تعلیمی سال کا آغاز
رجسٹریشن کا دورانیہ، 21 مارچ تا 31 اگست2020
 اعلان نتائج،  31 اگست تا 1 نومبر 2020    
 ایران آمد، 06 تا 24 دسمبر 2020
فارسی زبان کی کلاسز کا آغاز  25 دسمبر 2020
نئے تعلیمی سال کا آغاز 23 اگست 2021
            
نکتہ پنجم: تعلیمی قوانین اور نظم و ضبط کے پیش نظر امیدواروں کو چاہیے کہ وقت پہ رجسٹریشن کریں کیونکہ دئیے گئے دورانیہ میں کوئی تبدیلی نہیں کی جائے گی.

نکتہ ششم: امیدواروں کا یونیورسٹی میں ایڈمیشن ہو جانے کے بعد اور کلاسز شروع کرنے سے پہلے اپنے ملک میں وزارت علوم کے اعلی دفتر جیسے پاکستان میں (ہائیر ایجوکیشن کمیشن، (ایچ ای سی)) اور ایرانی کونسلیٹ سے تصدیق شدہ، ( آخری ڈگری اور مارکس شیٹ)، یونیورسٹی ایڈمیشن کمیٹی  کو  دیکھانا شرط ہے، ورنہ کلاسز میں جانے کی اجازت نہیں ہو گی. اس لئے ابھی سے تاکید کی جاتی ہے کہ یونیورسٹی سائٹ پر اپنا فارم پر کرنے کے ساتھ ہی اپنے  (Documents) مکمل کروا لیں.

۔ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے یونیورسٹی نے فارسی کی کلاسوں کو آنلاین منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور طلباء کے لیے کوئی پریشانی کی بات نہیں ہے۔

◀️ یونیورسٹی سے رابطہ کا طریقہ کار
1- بیشتر معلومات حاصل کرنے کے لئے آپ مندرجہ ذیل طریقوں سے ہم سے رابطہ کر سکتے ہیں:
 یونیورسٹی فون:   982122449240+
 ٹیلی گرام اور وٹس ایپ پر میسج کے ذریعے: 989101915801+ (@ABUadmission)
 ای میل کے ذریعے:  Email: This e-mail address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.
2- یونیورسٹی کی طرف سے تمام اطلاعات رسمی طریقے سے مندرجہ ذیل سائٹس پر  اپلوڈ کی جاتی ہیں لہذا امیدواروں کو مطع کیا جاتا ہے کہ وہ   صرف انہی راستوں سے مطلوبہ اطلاعات حاصل کریں:
 Telegram channel: @ABUadmission
University Website: abu.ac.ir

 اپنی شخصی اطلاعات حاصل کرنے کے لئے یونیورسٹی کی سایٹ پر دیے گئے ایڈرس کے ذریعے اقدام کریں :  ams.abu.ac.ir البتہ یہ رابطہ صرف رجسٹریشن کی تکمیل کے بعد ممکن ہو گا.

.................

سید حسن نصر اللہ کے نام آیت اللہ رمضانی کا تعزیتی پیغام

سید حسن نصر اللہ کے نام آیت اللہ رمضانی کا تعزیتی پیغام

ہفتہ, 08 اگست 2020

ہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کے سکریٹری جنرل ، آیت اللہ "رضا رمضانی" نے "سید حسن نصراللہ" کو بیروت کی بندرگاہ میں ہونے والے دھماکے کے بعد ایک تعزیتی پیغام بھیج کر اس دھماکے میں لبنانی شہریوں کی ایک بڑی تعداد کے جانبحق اور زخمی ہونے پر تسلیت پیش کی ہے۔

اہل بیت (ع) کے عالمی اسمبلی کے سکریٹری جنرل کے پیغام کا ترجمہ مندرجہ ذیل ہے۔


بسم الله الرحمن الرحیم


حضرت حجة الاسلام والمسلمین حاج سید حسن نصرالله دام عزه العالی
معزز ممبر برائے اعلیٰ کونسل اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی
اور سکریٹری جنرل برائے حزب اللہ لبنان


سلام علیکم بما صبرتم فنعم عقبی الدار؛


بیروت کی بندرگاہ میں ہوئے خوفناک دھماکے اور آپ کے ہم وطنوں کی ایک بڑی تعداد کی جانبحق اور زخمی ہونے نے ہمیں بہت غمزدہ اور غمگین کر دیا۔

ہم لبنان کے عزیز عوام اور محور مزاحمت سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے لبنان کے واقعات کو تشویش کے ساتھ دیکھ رہے ہیں۔ اور آپ کو یقین دلاتے ہیں کہ ہم بھی اس بحران میں آپ کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

یقینی طور پر ، لبنان کی مومن اور وفادار قوم، آپ کی دانشمندانہ رہنمائی کے ساتھ مختلف قوموں میں اتحاد کے تحفظ کے ذریعے ، صہیونی دشمن کے ناجائز عزائم کو ناکام بنائے گی۔ اور ماضی کی طرح اس مشکل امتحان میں بھی سربلند ہو گی۔ جیسا کہ حزب اللہ کے بہادر جوانوں نے سانحے کے ابتدائی لمحات سے ہی متاثرہ افراد کی خدمت شروع کر دی، آگے بھی امید ہے کہ خدا کے فضل و کرم سے کھنڈرات کی مکمل تعمیر نو تک یہ سلسلہ جاری رہے گا۔  
میں اپنی طرف سے اور اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے جملہ اراکین کی جانب سے اس اندوہ ناک واقعے میں کثیر تعداد میں جانوں کے ضیاع پر تسلیت پیش کرتے ہوئے مرحومین کے لیے بارگاہ رب العزت میں مغفرت اور پسماندگان کے لیے صبر و اجر کی دعا کرتا ہوں نیز زخمیوں کی جلد صحت یابی کی تمنا رکھتا ہوں۔
مشکلات اور پریشانیوں کے ان بحرانی حالات میں، میں آپ کے لیے بھی زینبی صبر کی امید رکھتا ہوں، اور رہبر انقلاب اسلامی کی اس خوشخبری کو دھراتا ہوں: اس حادثے کے مقابلے میں صبر کرنا لبنان کے اعزاز کی سنہری پتی ہو گی‘‘۔
وَاصْبِرْ لِحُكمِ رَبِّكَ فَإِنَّكَ بِأَعْيُنِنَا وَسَبِّحْ بِحَمدِ رَبِّكَ حينَ تَقُوم.
رضا رمضانی
سکریٹری جنرل برائے اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی
7 اگست ، 2016

<<  1 2 3 [45 6 7 8  >>  

عالمی اہل بیت اسمبلی

اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی، ایک عالمی اور غیر سرکاری تنظیم کی حیثیت سے، عالم اسلام کی ممتاز شخصیات کے ذریعے تشکیل دی گئی ہے۔ اہل بیت علیہم السلام کو مرکز فعالیت اس لیے انتخاب کیا گیا ہے کیونکہ اسلامی تعلیمات میں قرآن کریم کے ہمراہ، اہل بیت اطہار علیہم السلام ایک مقدس مرکزیت کی حیثیت رکھتے ہیں جنہیں تمام مسلمان مانتے ہیں۔

اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کا آئین نامہ آٹھ فصلوں اور تینتیس شقوں پر مشتمل ہے۔

  • ایران - تهران - بلوارکشاورز - نبش خیابان قدس - پلاک 246
  • 888950827 (0098-21)
  • 888950827 (0098-21)

ہم سے رابطہ کریں

موضوع
دوستوں کوارسال کریں
خط
5*7=? سیکورٹی کوڈ