سیکریٹری جنرل سے متعلق خبریں

علمائے اسلام مسئلہ یمن و فلسطین کے حل کے لیے آگے بڑھیں: آقائے اختری

علمائے اسلام مسئلہ یمن و فلسطین کے حل کے لیے آگے بڑھیں: آقائے اختری

حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے فارس نیوز ایجنسی سے گفتگو کے دوران اسلامی وحدت میں علمائے اسلام کے کردار کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ عراق و شام میں دھشتگردوں کے مقابلے میں مزاحمتی تحریک کی کامیابی علمائے اسلام کے اتحاد کا ایک بارز نمونہ ہے۔
انہوں نے کہا: افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ بعض اسلامی ممالک اس کوشش میں ہیں کہ فلسطین اور قدس کے مسئلے اور صہیونی ریاست کے جرائم کو فراموشیوں کے حوالے کر دیا جائے تاکہ اس طریقے سے وہ اس جرائم پیشہ ریاست کے ساتھ اپنا الو سیدھا کر سکیں۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ اسلامی ممالک کے باہمی تعاون سے ہی صہیونی ریاست کی جڑوں کو اکھاڑا جا سکتا ہے کہا: حقیقت میں صہیونی ریاست کی مدد کرنا، اس سے ہتھیار خریدنا یا اس کے ساتھ سیاسی اور تجارتی روابط قائم کرنا حرام اور مخالف شریعت ہیں۔
حجۃ اسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے مزید واضح کیا کہ علمائے اسلام کو چاہیے کہ اپنے اپنے فتووں کے ذریعے صہیونی ریاست کے ساتھ ہر طرح کے روابط کو حرام قرار دیں۔
انہوں نے یمن کے حالات کی طرف بھی اشارہ کرتے ہوئے کہا: آج امت اسلام بے شمار صلاحیتوں کی مالک ہے ایسے میں علمائے اسلام کو اپنے اپنے ممالک میں یمن کے مظلوم اور فلسطین کے نہتے عوام کے تئیں لوگوں کو بیدار کرنا اور ان سے مدد اکٹھا کرنا چاہیے۔

محبان اھل بیت(ع) عالمی کانگرنس کی مرکزی کونسل کے اراکین کی اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل سے ملاقات

محبان اھل بیت(ع) عالمی کانگرنس کی مرکزی کونسل کے اراکین کی اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل سے ملاقات

 محبان اہل بیت(ع) عالمی کانگرنس کی مرکزی کونسل کی پہلی کانفرنس میں شرکت کرنے والی بعض شخصیات نے حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری سے ملاقات اور گفتگو کی۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل نے اس ملاقات میں پوری دنیا کے محبان و پیروان اہل بیت(ع) کے ساتھ تعاون پر زور دیا۔


خیال رہے کہ محبان اہلبیت عالمی کانگرنس کی مرکزی کونسل کا اجلاس ایران کے دار الحکومت تہران میں منعقد ہوا یہ اجلاس جس میں شیعہ سنی علماء اور دانشور شخصیات نے شرکت کی، مجمع جہانی بیداری اسلامی کے توسط اور اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے تعاون سے منعقد ہوا ہے۔

..................

آیت اللہ اختری: رہبر اسلام، اسلامی تہذیب کو زندہ رکھنے کے خواہاں

آیت اللہ اختری: رہبر اسلام، اسلامی تہذیب کو زندہ رکھنے کے خواہاں

اسلامی تہذیب، انسانی معاشرے خصوصا اسلامی سماج کی کھوئی ہوئی شئے ہے۔ عزت، سعادت، سربلندی اور تمام انسانی و دینی اقدار اس معاشرے میں تحقق پاتے ہیں جہاں اسلامی تہذیب جلوہ گر ہو۔
یہ بات اہل بیت عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجت الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے مشہد مقدس میں منعقدہ ’’اسلامی تہذیب کانفرنس‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ بڑی طاقتوں کے زیر تسلط کمزور حکمران آج عالم اسلام کے لیے سب سے بڑی مصیبت ہیں کہا: ایک زمانے میں اسلامی تمدن خوب جلوہ نمائی کر رہا تھا لیکن آج ضعف، سستی، بے ثقافتی، ظلم و بے انصافی اسلامی معاشروں میں بڑھتی چلی جا رہی ہے یہاں تک کہ اسلامی سماج ایسے حکمرانوں کے ہاتھوں گرفتار ہوا ہے کہ انہوں نے اپنی اور اسلامی امت کے عزت و آبرو کو سستے دام بیچ دیا ہے اور وہ ستمگروں اور مکاروں کے سامنے ذلیل  و خوار ہو رہے ہیں۔
آقائے اختری نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ انقلاب اسلامی سے قبل ۸۰ ہزار امریکی مشیر ایران میں موجود تھے اور ایران سے اپنی وحشی گری کی تنخواہ لیتے تھے کہا: امریکہ کی ہماری نسبت دید میں آج بھی کوئی تبدیلی نہیں آئی ڈونلڈ ٹرمپ ہمیں اسی نگاہ سے دیکھتے ہیں لیکن اسلامی ممالک کے مسلمان، علما اور سیاستدان بیدار نہیں ہو رہے ہیں اور ان کے نیچے دبے ہوئے ہیں۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل نے اسلامی انقلاب اور امام راحل (رہ) کو عصر حاضرمیں خداوند عالم کی عظیم نعمت شمار کرتے ہوئے کہا: امام راحل نے انقلاب اسلامی کی برکت سے اسلام کو زندہ کیا اور مسلمانوں کو عزت بخشی۔ اور اس نعمت کا سلسلہ رہبر انقلاب اسلامی کے وجود سے جاری ہے آپ آج ایک شجاع، طاقتور، مدبر، دانشور اور حالات سے آگاہ رہبر ہونے کے عنوان سے دشمن کی تمام سازشوں کے مقابلے میں ڈٹے ہوئے ہیں اور اسلامی معاشرے کو سعادت، کمال اور ترقی کی طرف ہدایت کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہا: رہبر انقلاب اسلامی تہذیب و تمدن کے خواہاں ہیں اسلامی تمدن کے مختلف پہلو ہیں ان میں سے ایک اسلامی معاشرے کی علمی صلاحیتوں کو اجاگر کرنا ہے۔

<<  1 [23 4 5 6  >>  

عالمی اہل بیت اسمبلی

اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی، ایک عالمی اور غیر سرکاری تنظیم کی حیثیت سے، عالم اسلام کی ممتاز شخصیات کے ذریعے تشکیل دی گئی ہے۔ اہل بیت علیہم السلام کو مرکز فعالیت اس لیے انتخاب کیا گیا ہے کیونکہ اسلامی تعلیمات میں قرآن کریم کے ہمراہ، اہل بیت اطہار علیہم السلام ایک مقدس مرکزیت کی حیثیت رکھتے ہیں جنہیں تمام مسلمان مانتے ہیں۔

اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کا آئین نامہ آٹھ فصلوں اور تینتیس شقوں پر مشتمل ہے۔

  • ایران - تهران - بلوارکشاورز - نبش خیابان قدس - پلاک 246
  • 888950827 (0098-21)
  • 888950827 (0098-21)

ہم سے رابطہ کریں

موضوع
دوستوں کوارسال کریں
خط
7+2=? سیکورٹی کوڈ